مہمندایجنسی میں لینڈمایینز پھٹنے سے ایک بچہ جان بحق جبکہ دو زخمی

مہمند ایجنسی یکہ غنڈ کے علاقہ رنگینہ غنڈئی مچنئی میں زیر لینڈمائن پھٹنے سے ایک بچہ جان بحق جبکہ دوزخمی ہوے۔

مقامی حکام کے مطابق تحصیل یکہ غنڈ کے علاقہ مچنئی رنگینہ غنڈئی میں تین بچے اس وقت شدید زحمی ہوگئے جب وہ گھر کے تعمیر کے واسطے پہاڑی پتھر نکال رہے تھے کہ اس دوران ان پر زیر زمین پرانا گولہ پھٹ گیا مگر قبایلی علاقہ جات میں فوج نے بارودی سرنگیں بچھاییں ہیں جنکے خلاف پشتون ایک تحریک کی شکل میں نکل اے ہیں یعنی پشتون تحفظ مومنٹ۔

اس تحریک کا ایک مطالبہ قبایلی علاقوں سے باردوی سرنگ یعنی لینڈمایںز کا صفایہ بھی ہے۔ جب لوگوں نے ماینز پھٹنے کی آواز سنی تو وہ وہاں پہنچ گئے اور بچو ں کو مقامی ہسپتال منتقل کیا جہاں سے ان سب کو مزید علاج کی عرض سے پشاور منتقل کیا گیا۔ ایک بچہ واسع ولد فاتح خان زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسا جبکہ دیگر دو بچے علاض کی عرض سے ہسپتال میں داخل کیا گیا واضع رہے کہ فاٹا میں بالعموم اور وزیرستان میں بالخصوص میں لیںڈ مایینز اور پاک فورس کے گراے گئے بم جو پھٹے نہیں اور جوں کے توں رہے ان سے انسانی جانیں ضایع ہو رہی ہیں۔ یاد رہے کہ پاک فوج اور پاک فضاییہ نے فاٹا اور سوات میں گیارہ ہزار سے زیادہ بم گراے ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

%d bloggers like this: