شہید نقیب کا قتل آخری، مزید کسی بے گناہ پشتون کا قتل نا ممکن بنا دیں گے: محسود قبائل تحفظ قومی موومنٹ

Bannu

کراچی میں شہید نقیب اللہ محسود کے ماورائے عدالت قتل کے خلاف جنوبی وزیرستان محسود قبائل تحفظ قومی موومنٹ کے پیدل مارچ نے بنوں میں پریس کلب کے سامنے احتجاجی دھر نا دیا ان کے ساتھ مختلف سیاسی جماعتوں کے کارکن اور طلباء بھی شریک ہوئے مظاہرین نے ماورائے قتل کے تحقیقات اور انور راؤ کو پھانسی دینے کا مطالبہ کیا مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے منظور پشتون ، وحید ، ندیم عسکر و دیگرنے کہا کہ جعلی پولیس مقابلے میں شہید نقیب اللہ محسودکا قتل اب آخری قتل ثابت کردیں گے کہ مزید کسی بے گناہ پشتون کے قتل پر پورے ملک کے پشتون خاموش بیٹھنے والے نہیں نقیب کو صرف اس گناہ پر قتل کیا گیا ہے کہ وہ ایک شریف پشتون تھے اور یہ صرف ایک واقعہ نہیں صرف کراچی میں گزشتہ سال کے دوران 976 بے گناہ پشتونوں کو جعلی پولیس مقابلوں میں شہیدکیا گیاان میں چار سو سے زائد فاٹا سے تعلق رکھنے والے پشتون قبائلی تھے کراچی پولیس نے قانون کو ہاتھ میں لے کر پشتونوں کو جعلی پولیس مقابلوں میں شہید کرانے کا سلسلہ شروع کر رکھا ہے جو مزید برداشت سے باہر ہے لیکن نقیب اللہ محسود کا قتل اس کی اُخری قتل ہے اُنہوں نے کہا کہ شہید نقیب اللہ محسود کسی نہ تو کسی کالعدم دہشت گرد تنظیم میں تھے اور نہ ہی کسی ریاست مخالف سر گرمیوں کے لئے کراچی گئے تھے بلکہ وہ محنت مزدوری کے لئے کراچی گئے تھے اس کو ملک اور قوم سے اس قدر لگاؤ تھا کہ وہ اپنی بیٹے کو فوج میں بھرتی کا خواہاں تھا نقیب اللہ کے شہید ہونے کے بعد اب ان کے بیٹے سے پر امن رہنے کی توقع کیسے کی جا سکتی ہے مظاہرین نے کہا کہ جب بھی وزیر ستان میں کوئی واقعہ ہوتا ہے تو کرفیو نافذ کیا جاتا ہے اور لوگ محصور ہوکر رہ جاتے ہیں جس کاروبار زندگی متاثر ہو جاتا ہے ہم مطالبہ کرتے ہیں شہید محسودکے قاتل انور راؤ کو پھانسی دی جائے اور ملک میں جہاں کہیں بھی پشتونوں کو لاپتہ کرایا گیا ہے عدالتوں میں پیش کیا جائے واضح رہے یہ پیدل مارچ ڈی آئی خان سے نکالا گیا ہے کل بروز اتوار پشاور جبکہ یکم فروی کو اسلام آباد میں اپنا احتجاج ریکارڈ کرے گا ۔

وسیم، بنوں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

%d bloggers like this: