بنوں: پاکستان انجینئرنگ کونسل طلبہ کیساتھ ظلم بند کریں۔سخت ترین مراحل طے کرکے داخلہ لیا ہے ۔طلبہ کا مؤقف

UETB

 بنوں(وسیم باغی سے ) انجینئرنگ یونیورسٹی بنوں کیمپس کے طلبہ کا مطالبات کے حق میں بھوک ہڑتالی کیمپ و احتجاجی مظاہرہ۔امتیازی پوزیشن حاصل کرنے کے باوجود گزشتہ 19ماہ سے پاکستان انجینئرنگ کونسل کیساتھ رجسٹریشن نہیں کی گئی ۔ سرکاری محکموں میں ملازمت پا نے والے طلبہ کوپی ای سی کارڈ نہ ہونے کی وجہ سے نکال دیا گیا ۔طلبہ کا مؤقف ۔ سوموار کے روزپاکستان انجینئرنگ کونسل کی جانب سے ایگریڈیشن کارڈز جاری نہ ہونے کے خلاف پشاور انجینئرنگ یونیورسٹی بنوں کیمپس کے طلبہ نے کلاسوں کا بائیکاٹ کرکے یونیورسٹی کیمپس میں بھوک ہڑتالی کیمپ اور بعد ازاں احتجاجی مظاہرہ کیا۔مظاہرین سے خطاب کرتے ہُوئے سلمان خان ،وقار یونس ،ثاقب یوسف ،سلطان شاہ ،رفیع اللہ،سمیع اللہ اور دیگر طلبہ رہنماؤں کا کہنا تھا کہ ہم نے انتہائی سخت ترین مراحل طے کرکے انجینئرنگ میں داخلہ لیا۔بنوں کیمپس کے طلبہ نے ہر امتحان میں امتیازی پوزیشن حاصل کی ہے اس کے باوجود بھی کیمپس کے طلبہ کیساتھ امتیازی سلوک جاری ہے اور پاکستان انجینئرنگ کونسل کی جانب سے ایگریڈیشن کارڈ کا اجراء نہیں کیا جا رہا جس کی وجہ سے یہاں کے طلبہ مقابلے کے امتحانات میں حصہ نہیں لے سکتے ۔اُن کا کہنا تھا کہ نہایت آفسوس کا مقام ہے جب سے بنوں کیمپس قائم ہُوا ہے آج تک وائس چانسلر،ڈین اور پاکستان انجینئرنگ کونسل ٹیم نے یہاں کا دورہ نہیں کیا۔ سال 2011میں فارغ التحصیل ہونے والے طلبہ قومی اداروں میں ملازمت حاصل کرکے اُنہیں اسی وجہ سے ملازمت سے فارغ کر دیا گیا کہ ان کے پاس پی ای سی کارڈ زنہیں تھے۔طلبہ کے احتجاج کی کوریج کرنے والے میڈیا ٹیم کیلئے انتظامیہ نے کیمپس کا مرکزی دروازہ بند کر دیا اور طلبہ کو دھمکیاں دی کہ اگر کسی نے میڈیا کو مؤقف دیا تو ان کے خلاف کارروائی کی جائے گی اس کے باوجود طلبہ مؤقف ریکارڈ کرانے کیلئے کیمپس کے باہر میڈیا کو اپنے مطالبات کے بارے میں آگاہ کیا۔ اُنہوں نے مطالبہ کیا کہ الیکٹریکل اور سول انجینئرنگ شعبہ جات کی پاکستان انجینئرنگ کونسل کیساتھ رجسٹریشن کرائی جائے رجسٹریشن کے بغیر ہمارے تقریباً825طلبہ کا مستقبل تاریک ہونے کا خدشہ ہے اور بغیر رجسٹریشن کے ہماری ڈگریاں بیرون ممالک میں قابل قبول نہیں۔مظاہرین نے کہا کہ جب تک وائس چانسلر،ڈین یا پی ای سی ٹیم بنوں کیمپس کا دورہ نہیں کرتی اور طلبہ کو ایگریڈیشن کارڈ نہیں کئے جاتے ہمارا احتجاج جاری رہے گا۔

From our correspondent Wasim Baghi

THE PASHTUN TIMES

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

%d bloggers like this: